April 23, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/redpanal.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253

پیر کو ایک پولیس بیان میں کہا گیا کہ اطالوی پولیس نے وسطی اٹلی میں مقیم تین فلسطینیوں کو گرفتار کیا ہے جو ان کے بقول ایک غیر متعینہ ملک میں حملوں کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔

اس میں کہا گیا ہے کہ روم کے شمال مشرق میں تقریباً 120 کلومیٹر (75 میل) کے فاصلے پر لاکیلا میں رہنے والے تین افراد نے الاقصیٰ شہداء بریگیڈز سے منسلک ایک سیل قائم کیا ہوا تھا۔

الاقصیٰ شہداء بریگیڈز ایک مسلح گروپ ہے جو فلسطینی صدر محمود عباس کی تحریک الفتح سے منسلک ہے اور اسے اسرائیل، یورپی یونین اور امریکہ دہشت گرد گروپ تصور کرتے ہیں۔

پولیس نے کہا کہ تینوں فلسطینیوں پر دہشت گردی کے مقاصد یا جمہوری نظام کی خلاف ورزی کے لیے مجرمانہ سازش کا الزام عائد کیا گیا ہے جس میں 15 سال تک قید کی سزا سنائی جا سکتی ہے۔

پولیس نے کہا، “مشتبہ افراد مذہب پرستی اور پروپیگنڈا (…) میں مصروف تھے اور انہوں نے غیر ملکی سرزمین پر سویلین اور فوجی اہداف کے خلاف خودکش حملوں سمیت حملوں کی منصوبہ بندی کی۔”

بیان میں مزید کہا گیا، تین افراد میں سے ایک اسرائیل کو مطلوب ہے جو غزہ کی پٹی میں فلسطینی گروپ حماس کے ساتھ جنگ میں مصروف ہے اور ایک اطالوی عدالت اس کی حوالگی کی درخواست کا جائزہ لے رہی ہے۔

ایک الگ بیان میں وزیرِ داخلہ میٹیو پیانتی دوزی نے “تین خطرناک دہشت گردوں” کی گرفتاری کو سراہتے ہوئے کہا، اٹلی انتہا پسندی اور بنیاد پرستی کے خلاف ہمیشہ ہائی الرٹ ہے۔

الاقصیٰ شہداء بریگیڈز کی جانب سے فوری طور پر کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *