April 14, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/redpanal.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253

دنیا کے سب سے مشہور سرچ انجن ’گوگل‘ نے ماں اور بچے کی تصویر پہ مبنی گوگل ڈوڈل تبدیل کر کے ماؤں کا عالمی دن منایا ہے۔

جس طرح مدرز ڈے منانے کا طریقہ ایک سے دوسرے ملک میں مختلف ہوتا ہے اسی طرح منانے کی تاریخ بھی ایک سے دوسرے ملک میں بدل جاتی ہے۔

مصر اور عرب ممالک کے ساتھ ساتھ یہ دنیا کے کئی ممالک میں 21 مارچ کو منایا جاتا ہے۔

جنوبی افریقہ میں، یہ 1 مئی کو منایا جاتا ہے، اور ارجنٹائن میں، یہ 3 اکتوبر کو منایا جاتا ہے۔ امریکہ اور جرمنی میں یہ دن ہر سال مئی کے دوسرے اتوار کو منایا جاتا ہے۔

اس تمام فرق کے باوجود، ہر جگہ اس دن کو منانے کا مقصد ایک عظیم عورت کو خراج تحسین پیش کرنا ہے جو خاندان کی بنیاد ہوتی ہے۔

مدرز ڈے کو سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر سب سے زیادہ سرچ کیے جانے والے الفاظ میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔

تاریخی ذرائع کے مطابق مدرز ڈے منانے کا آغاز 1907 میں امریکہ سے ہوا، جب سماجی کارکن اینا جارویس نے امریکی ماؤں کو منانے کے لیے ایک دن مقرر کرنے کا مطالبہ کیا۔ امریکی صدر ولسن نے اس دن کو امریکہ میں سرکاری تعطیل بنایا جب کانگریس نے اس دن کو ہر سال منانے کی منظوری دی۔

مصر میں مدرز ڈے منانے کا خیال پیش کرنے والے پہلے شخص مرحوم مصری صحافی علی امین تھے، جو “اخبار الیوم” اخبار کے بانی تھے۔

علی امین نے اپنے روزنامہ کے ایک مضمون میں مدرز ڈے منانے کا خیال پیش کرتے ہوئے کہا: “ہم سال کے کسی دن کو ماؤں کا دن کہنے پر کیوں متفق نہیں ہیں؟” اور ہم اسے اپنے ملک اور دیگر ممالک میں قومی تہوار کیوں نہیں بناتے ہیں۔ آئیے 21 مارچ کو موسم بہار کے موسم کے آغاز کے ساتھ اس دن کو منائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *